پٹرولیم بحران؛ اوگرا اور وزارت توانائی کے افسران سمیت 5 افراد گرفتار

0
32

لاہور: ایف آئی اے نے پٹرولیم بحران پر کارروائی کرتے ہوئے 5 ملزمان کو منی لانڈرنگ کے الزام میں گرفتار کرکے مقدمہ درج کرلیا۔

ایف آئی اے لاہور نے پٹرولیم مافیا، آئل مارکیٹنگ کمپنیز، اوگرا ، وزارت توانائی و پٹرولیم ڈویژن و دیگر کے خلاف گھیرا تنگ کرنا شروع کردیا۔وفاقی حکومت کے احکامات پر پیٹرولیم بحران کی انکوائریز کے بعد ایف آئی اے لاہور نے فوسل انرجی اور عاسکر آئل (پیٹرولیم مارکیٹنگ کمپنیز) پر مقدمات درج کرلیے۔ایف آئی اے نے سی ای و فوسل انرجی ندیم بٹ ،اوگرا کےممبر گیس عامر نسیم ، ممبر آئل عبداللہ ملک اور وزارت توانائی و پٹرولیم کے ڈی جی آئل شفیع اللہ آفریدی اور اسسٹنٹ ڈائریکٹر آئل عمران ابڑو کو گرفتار کرلیا۔ان اوگرا کے افسران نے غیر قانونی پیٹرولیم مارکیٹنگ لائسنس جاری کئے۔ وزارت توانائی و پٹرولیم ڈویژن کے افسران نے ناجائز پیٹرولیم امپورٹ کوٹہ جاری کیا۔ پیٹرولیم مارکیٹنگ کمپنیز نے اوگرا کی آشیر آباد سے منظور شدہ پیٹرول پمپس سے زیادہ غیر قانونی پیٹرول پمپس کا ملک بھر میں جال بچھایا۔ملزمان کے خلاف ملی بھگت سے غیر قانونی پیٹرولیم مارکیٹنگ لائسنس، ناجائز پیٹرولیم امپورٹ کوٹہ اور غیر قانونی پیٹرولیم امپورٹس کی خریدوفروخت سے قومی خزانے کو اربوں روپے کا نقصان پہنچانے اور اس سے کمائے جانے والے اربوں روپے کے ناجائز دھن کی منی لانڈرنگ کا الزام ہے۔ ایف آئی اے نے ملزمان کا چار روزہ جسمانی ریمانڈ بھی حاصل کرلیا ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here