نیویارک:کشمیر مشن یو ایس اے کے زیراہتمام ٹائم سکوائر پریوم سیاہ کے موقع پر مظاہرہ

0
190

اقوام متحدہ مقبوضہ کشمیر پربھارت کے غاصبانہ قبضے کے خلاف اپنا کردار ادا کرے اور نریندر مودی اور اس کے غنڈوں کو مقبوضہ کشمیر سے نکالا جائے جنہوں نے کشمیر کی بیٹیوں‘ بیٹوں‘بچوں اور بزرگوں کا ناجائز قتل عام کیا اور آج بھی کر رہی ہے‘صدر بائیڈن اور انسانی حقوق کی تنظیمیں بھی آگے آئیں‘ تاج محمد

آج سے 74سال پہلے انڈیا نے اس وادی پر قبضہ کیا تھا‘سات دہائیوں پہلے اقوام متحدہ نے کشمیریوں سے ایک وعدہ کیا تھا جس کا آج بھی کشمیری انتظار کررہے ہیں‘ کشمیری اس مظاہرے میں اقوام متحدہ کو وہ وعدہ بھی یاد دلانے آئے ہیں جو یو این نے انڈیا کے کہنے پر کشمیریوں کے ساتھ کیاتھا‘راجہ رزاق

(ٹائم سکوائر‘نیویارک (منظور حسین سے

کشمیرمشن یو ایس اے کے زیراہتمام مین ہیٹن ٹائم سکوائر پریوم سیاہ کے موقع پر بڑے مظاہرے کا انعقاد کیا گیا جس کی قیادت کشمیر مشن یو ایس اے کے صدر ممتاز پاکستانی امریکن بزنس مین تاج محمد نے کی – 27 اکتوبر 1947 کے دن بھارتی فوج نے کشمیر پر غیر قانونی قبضہ کیا، 74 سال سے کشمیری اس دن کو یوم سیاہ کے طور پر مناتے ہیں –

مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے کشمیر مشن یوایس اے کے صدر تاج محمد نے اقوام متحدہ سے مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ مقبوضہ کشمیر پر غاصبانہ قبضے کے خلاف اپنا کردار ادا کرے اور نریندر مودی اور اس کے غنڈوں کو مقبوضہ کشمیر سے نکالا جائے جنہوں نے کشمیر کی بیٹیوں‘ بیٹوں‘بچوں اور بزرگوں کا ناجائز قتل عام کیا اور آج بھی کر رہی ہے-

آج یو این صدر دفتر کے سامنے میں امریکی صدر جوبائیڈن سے بھی مطالبہ کرتا ہوں کہ انتخابات سے قبل صدر جوبائیڈن نے کہا تھا کہ اگر میں اس ملک کا صدر بنا تو کشمیر کی آزادی کی بات کروں گا آج میں اس مظاہرے میں صدربائیڈن کو ان کا وعدہ بھی یاد دلانا چاہتاہوں اور پوری دنیا کی انسانی حقوقوں کی تنظیموں کو بھی بتانا چاہتا ہوں کہ انڈیا کے حکمرانوں نے مقبوضہ کشمیر پر غاصبانہ قبضہ کیا ہوا ہے آئیں اور کشمیر پر ہونے والے مظالم‘غنڈہ گردی اور قتل عام پر اپنی آواز اٹھائے اور ہمارے کشمیری بہن بھائیوں کے ساتھ آ کر کھڑے ہوں – میں دنیا کو یہ بھی بتانا چا ہتا ہوں کہ میرے کشمیر کے بیٹے‘بیٹیاں اور بزرگ جب رات کو سوتے ہیں تو ان کو یہ پتہ نہیں ہوتا کہ انہیں صبح اٹھنا ہے یا نہیں

میں اقوام عالم کو یہ بھی بتانا چاہتاہوں کہ اگر مقبوضہ کشمیر کا مسئلہ حل نہ ہوا تو ہم بہت جلد تیسری جنگ کی طرف چلے جائیں گے-میں آزاد کشمیر کے نوجوانوں‘ آزاد کشمیر کے حکمرانوں اور وہاں پر موجود مختلف جماعتوں کو کہنا چاہتا ہوں کہ خدا راہ کیا تم لوگوں کو وہ بچہ نظر نہیں آتا‘وہ بچی نظر نہیں آتی جب وہ رات کو سوتے ہیں تو ان کے ذہن میں یہ خوف ہوتا ہے کہ کس وقت آر ایس ایس کے غنڈے آئیں اور انہیں چیر پھاڑ دیں -ان کی ماں‘باپ‘ بھائیوں کی بے عزتی کریں -دنیا کے ٹھیکیداروں خداراہ اس ظلم کو دیکھیں اور اس کو بند کروائیں -میں حریت کانفرنس کے عمائدین‘ مقبوضہ کشمیر کے بچوں‘ بزرگوں سے یہی کہوں گا کہ آپ ہمت اور حوصلے سے اس ظلم اور بربریت کو برداشت کریں انشاء اللہ ایک دن آئے گا جب ہمیں آزادی ملے گا-

پیپلزپارٹی یو ایس اے کے جنرل سیکرٹری پرویز اسد نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ آج ہم ٹائم سکوائر پر اس لیے اکٹھے ہوئے ہیں کہ پوری دنیا کو جگایا جائے اور اقوام متحدہ سے گزارش کرتے ہیں انڈیا کو ان کے عزائم سے روکا جائے-پاکستان مسلم لیگ (ن)یو ایس اے کے سینئر رہنماء راجہ رزاق پران اور پاکستان مسلم لیگ (ن)کے لوگوں کی کثیر تعداد نے اس مظاہرے میں شرکت کی-اس موقع پر راجہ رزاق نے کہا کہ آج 27اکتوبر ہے جس کو کشمیری بلیک ڈے کے طور پر مناتے ہیں -آج سے 74سال پہلے انڈیا نے اس وادی پر قبضہ کیا تھا-سات دہائیوں پہلے اقوام متحدہ نے کشمیریوں سے ایک وعدہ کیا تھا جس کا آج بھی کشمیری انتظار کررہے ہیں

آج کے دن امریکہ میں بسنے والے کشمیری اس مظاہرے میں اقوام متحدہ کو وہ وعدہ بھی یاد دلانے آئے ہیں جو یو این نے انڈیا کے کہنے پر کشمیریوں کے ساتھ کیاتھااور آج یہ حالات ہیں کہ پچھلے دو سالوں سے کشمیریوں پر ظلم وبربریت کی انتہا کر دی گئی ہے جہاں لاک ڈاؤن کی وجہ سے کشمیری بچے‘بچیاں‘ بزرگ‘عورتیں کسمپرسی کی زندگی بسر کررہے ہیں جنہیں نہ خوراک مل رہی ہے نہ انہیں میڈیکل کی سہولتیں میسر ہیں -آج ہم اقوام متحدہ اور پوری دنیا سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ مقبوضہ کشمیر پر لگے ہوئے ناجائز لاک ڈاؤن کو ختم کروائیں اور نریندر مودی کی حکومت جو مقبوضہ کشمیر میں ظلم وبربریت اور قتل عام کررہی ہے اسے فی الفور بند کروایا جائے اور کشمیریوں کو آزادی کا حق دیا جائے-

مظاہرین سے راجہ مختار احمد‘ صغیر خان‘ سردار محمود‘ سردار واجد سوار‘ محمد اورنگزیب‘ محمد داؤد نے بھی خطاب کیا اور کہاعالمی برادری سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ کشمیریوں پر ہونے والے بھارتی مظالم اور انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں پر چپ کا روزہ توڑ کر اور ایک خاموش تماشائی کا کردار ختم کر کے انصاف پسندی کا مظاہرہ کرتے ہوئے ان بھارتی مظالم کا فوری نوٹس لیں اوراقوام متحدہ غیر جانبداری اور انصاف پسندی سے مسئلہ کشمیر کے کشمیریوں کی خواہشات اور امنگوں کے مطابق حل کے لئے فوری اقدامات کرے-ہم آزادی چاہتے ہیں ہمیں اپنے مستقبل کا فیصلہ کرنے کے لئے فوری طور پر غیر مشروط حق خود ارادیت دیا جائے

اس موقع پر مظاہرین نے پلے کارڈ اٹھارکھے تھے جن پرمقبوضہ کشمیر میں قتل عام بند کرو‘ انڈیا دہشت گرد‘کشمیریوں کو آزادی دوجیسے نعرے درج تھے

 

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here