ڈاکٹر عبدالقدیر کو مکمل سرکاری اعزاز کیساتھ سپرد خاک کیا جائے گافیصل مسجد میں نماز جنازہ کی تیاریاں مکمل

0
93

اسلام آباد: ڈاکٹر عبدالقدیر کو مکمل سرکاری اعزاز کے ساتھ فیصل مسجد میں سپرد خاک کیا جائے گا۔ ا 

 وزیراعظم عمران خان نے ڈاکٹر عبدالقدیر خان کی پورے سرکاری اعزاز کے ساتھ تدفین کی ہدایت کردی ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے ڈاکٹر قدیر کے انتقال پر گہرے دکھ کا اظہار کرتے ہوئے بیان جاری کیا کہ پاکستانی عوام کے لئے ڈاکٹر قدیر قومی ہیرو تھے، ملک کو ایٹمی ریاست بنانے پر قوم ان سے محبت کرتی ہے، انہوں  نے ہمیں ایک جارح ایٹمی پڑوسی سے تحفظ فراہم کیا، ڈاکٹر قدیر کو ایچ ایٹ اسلام آباد کے قبرستان میں  سپرد خاک کیا جائے گا۔ذرائع کے مطابق ڈاکٹر عبدالقدیر خان کے اہل خانہ کا کہنا ہے کہ ڈاکٹر قدیر کے اہل خانہ ایچ ایٹ قبرستان میں تدفین چاہتے ہیں، لیکن مرحوم کی خواہش تھی کہ ان کی نماز جنازہ فیصل مسجد میں پڑھائی جائے اور فیصل مسجد کے احاطے میں تدفین ہوا، ان کی خواہش کو مد نظر رکھتے ہوئے محسن پاکستان کی نماز جنازہ دوپہر 3 بجے فیصل مسجد اسلام آباد میں ادا کی جائے گی، بین الاقوامی اسلامی یونیورسٹی کے وائس چانسلر نماز جنازہ پڑھائیں گے، جب کہ تدفین ایچ ایٹ قبرستان میں کی جائے گی، ایچ ایٹ قبرستان میں جنازہ گاہ بیس سال قبل ڈاکٹر عبدالقدیر نے اپنی جیب سے بیس لاکھ روپے خرچ کرکے عطیہ کے طور پر تعمیر کروائی تھی، انہیں ایچ ایٹ کے قبرستان میں سپرد خان کرنے کا  فیصلہ ان کے اہلخانہ کی مشاورت سے کیا گیا ہے۔دوسری جانب وزیرداخلہ شیخ رشید احمد نے سی ڈی اے ہیڈ کوارٹر میں ہنگامی اجلاس بلایا، جس میں ڈاکٹر عبدالقدیر خان کی نماز جنازہ کے انتظامات کوحتمی شکل دی گئی۔ اجلاس کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے وزیر داخلہ شیخ رشید کا کہنا تھا کہ ڈاکٹر عبد القدیر کی نماز جنازہ ساڑھے تین بجے فیصل مسجد میں ادا کی جائے گی، ان کی قبر کے دو مقامات فیصل مسجد اور ایچ ایٹ قبرستان میں انتظامات کیئے گئے، تاہم ڈاکٹر عبد القدیر کے اہل خانہ کے فیصلے کے مطابق ایف ایٹ قبرستان میں سپرد خاک کیا جائے گا، اور محسن پاکستان کو پورےاعزاز کے ساتھ رخصت کیا جائےگا، اس موقع پر قومی پرچم کو نصف سر نگوں کیاجائے گا۔شیخ رشید کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان نے ہدایت کی کہ تمام وزرا ڈاکٹر قدیر کے جنازے میں شرکت کریں۔ عسکری قیادت بھی نمازجنازہ میں شریک ہوگی جب کہ جنازے میں عوام الناس بھی شرکت کر سکیں گے، وزیر اعظم نے ہدایت کی ان کو پورے اعزاز کے ساتھ دفن کیا جائے۔وزیرداخلہ نے کہا کہ ڈاکٹر عبد القدیر عظیم سائنسدان تھے، پوری قوم رنجیدہ ہے کہ محسن پاکستان رخصت ہوگئے، 1998 میں ان کی صلاحیتوں سے پاکستان ایک محفوظ ملک بنا، انہیں صدارتی ایوارڈ سے  نوازا گیا۔

ڈاکٹر عبدالقدیر خان کی خواہش کے مطابق ان کی نماز جنازہ اسلام آباد کی فیصل مسجد میں ادا کی جائے گی جب کہ انہیں ایچ 8 کے قبرستان میں سپرد خاک کیا جائے گا۔ڈاکٹر عبدالقدیر خان  کافی عرصے سے علیل تھے۔ اتوار کی علی الصبح ڈاکٹر عبدالقدیر خان کو پھیپھڑوں میں تکلیف کے باعث اسپتال منتقل کیا گیا تھا تاہم وہ جاں بر نہ ہو سکے اور خالق حقیقی سے جا ملے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here