جوڈیشری کا ایسا نظام قائم کرینگے جو انصاف کی فراہمی کیلئے مثالی کردار ادا کریگا،بیرسٹر سلطان چوہدری

0
37

میرپور :___ صدر ریاست آزاد جموں وکشمیر بیرسٹر سلطان محمود چوہدری نے کہا ہے کہ آزاد کشمیر میں عدالتی بحران جلد حل کر دیا جائے گا ریاست کے اندر جوڈیشری کا ایسا نظام قائم کریں گے جو انصاف کی فراہمی کے لیے مثالی کردار ادا کرے گا ججز کی تقرریوں میں میرٹ کو ترجیحی دی جائے گی انصاف کے بغیر ترقی یافتہ معاشرے کا قیام ممکن نہیں دوسری جنگ عظیم کے وقت جب برطانیہ تباہ حال ہو چکا تھا اور اس کی شکست واضح نظر آ رہی تھی اس وقت کے برطانوی وزیراعظم چرچل نے کہا تھا کہ کیا برطانوی عدالتوں میں انصاف ہو رہا ہے چرچل کو جواب دیا گیا کہ ہاں عدالتوں میں انصاف ہو رہا ہے اس پر چرچل نے کہا تھا کہ جب تک برطانیہ کی عدالتوں میں انصاف ہوتا رہے گا دنیا کی کوئی قوم برطانیہ کو تباہ نہیں کر سکتی وکلاء معاشرے کا طبقہ ہے وکلاء کشمیر ایشو کے لیے اپنا کردار ادا کریں کشمیر ایشو کو عالمی سطح پر اجاگر کرنے کیلئے ریاست کے وکلاء دیگر ممالک کی بار ایسوسی ایشنز سے رابطہ کریں اور انہیں مقبوضہ کشمیر میں جاری بھارتی مظالم سے آگاہ کریں عالمی سطح پر کشمیر کاز کے حق میں عالمی رائے عامہ قائم کرنے میں آزاد کشمیر کے وکلاء فیصلہ کن رول ادا کر سکتے ہیں میری پہلی اور آخری ترجیحی کشمیر کاز کے لیے جدوجہد کرنا ہے عالمی سطح پر کشمیر کاز کو جارحانہ انداز میں اجاگر کرنے کیلئے اپنا بھرپور کردار ادا کروں گا میں صدر ریاست کا حلف اٹھاتے ہوئے کہا تھا کہ میں آزادی کے بیس کیمپ کا صدر ہوں انشائاللہ ہم آزاد کشمیر کو حقیقی معنوں میں آزادی کا بیس کیمپ بنائیں گے ہمارا نقظہ نظر یہ ہے کہ کشمیر کاز کو اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حل کیا جائے یہی موقف میں نے امریکہ کے دورے کے دوران عالمی برادری کے سامنے رکھا امریکہ کا حالیہ دورہ کشمیر کاز کے تناظر میں اہم پیش رفت تھی میں یہ دورہ اس وقت کیا جب اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کا اجلاس جاری تھا مودی کے جنرل اسمبلی سے خطاب کے موقع پر میں اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے باہر مودی کے خلاف اوورسیز کمیونٹی کے بڑے احتجاجی مظاہرہ کی قیادت کی اس مظاہرے کے زریعے ہم عالمی برادری کے آمنے مودی کے مکروہ چہرہ کو بے نقاب کیا امریکہ کے دورے کے دوران میں نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس میں شرکت کی آزاد کشمیر سے میں پہلا منتخب صدر ہوں جس نے جنرل اسمبلی کے اجلاس میں شرکت کی ساٹھ سالوں میں اس سے قبل کسی منتخب صدر یا وزیراعظم نے جنرل اسمبلی کے اجلاس میں شرکت نہیں کی ہم وکلاء برادری کو درپیش مسائل حل کریں گے وکلاء کالونی کے قیام میں اپنا کردار ادا کروں گا میں نے اپنے دور حکومت میں ریاست کے اندر بار کونسل قائم کی تاکہ وکلاء کے حقوق کا تحفظ ہو سکے معاشرے کی ترقی کے لیے احتساب کا عمل شفاف ہونا چاہیے میں نے اپنے دور حکومت میں احتساب ایکٹ کی تشکیل دی میرے دور حکومت میں احتساب کا عمل اس قدر شفاف تھا کہ میرے وزرا تک کا احتساب ہوتا تھا بعد کی حکومتوں نے احتساب ایکٹ کے دانت نکال کر اس کی افادیت ختم کر دی ہم انشائاللہ دوبارہ احتساب کے عمل کو شفاف بنائیں گے ان خیالات کا اظہار صدر ریاست بیرسٹر سلطان محمود چوہدری نے ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن میرپور کے اجلاس سے بطور مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر بار بار ایسوسی ایشن میرپور کے صدر مسعود احمد شیخ اور جنرل سیکرٹری چوہدری شہزاد ایڈووکیٹ نے بھی خطاب کیا۔

اس موقع پر وائس چیئرمین آزاد کشمیر بار کونسل مقبول وار و دیگر بھی موجود تھے۔ اس سے قبل صدر ریاست بننے کے بعد بیرسٹر سلطان محمود چوہدری کی پہلی بار ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن میرپور آمد ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن میرپور آمد پر بار ایسوسی ایشن میرپور کے صدر مسعود احمد شیخ کی قیادت میں وکلاء نے بیرسٹر سلطان محمود چوہدری کا والہانہ استقبال کیا ان پر پھولوں کی پتیاں نچھاور کی گئیں انہیں پھولوں کے ہار پہنائے گئے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here