پشاور شہر سے تعلق رکھنے والے ایک پاکستانی نے ملک وقوم کی عزت خاک میں ملادی ، جعلسازی کرکے جاپان میں داخل ہونے کی ناکام کوشش،تحقیقات کا آغاز

0
1603

دنیا نیوز ،10 اگست،تویاما(طاہرحسین سے) پاکستان کے سکیورٹی اداروں کی آنکھوں میں دھول جھونک کر جعلسازی و غیر قانونی طریقے سے کراچی ائرپورٹ سے روانہ ہونے والے اسماعیل نامی ایک پاکستانی کو گزشتہ روز ناریتا ائرپورٹ پر امیگریشن حکام نے بینالاقوامی ایجنسی کی طرف سے خفیہ رپورٹ ملنے پر جہاز سے اترتے ہی دبوچ لیا۔ واقعہ کی اطلاع ملنے پر دنیا انٹرنیشنل نے ناریتا امیگریشن حکام سے فوری رابطہ کیا۔

تفصیلات کےمطابق اسماعیل کے پاس ایک سال کا ویزہ ہے جس پر موجودہ انٹری بین کی وجہ سے جاپان داخل ہونے کی نہ صرف سخت ممانعت ہے بلکہ پاکستانی ائرپورٹوں سے بورڈنگ بھی ناممکن ہے لیکن سخت سکیورٹی اقدامات کے باوجود کراچی ائرپورٹ پر موجود چند کالی بھیڑوں کی ملی بھگت کے باعث یہ شخص بورڈنگ کرانے میں کامیاب ہوگیا۔ پشاور کے شبہ بازار سے تعلق رکھنے والا اسماعیل نامی شخص شیزوکا میں کباڑ کا کاروبار کرنے والے ایک پاکستانی حاجی رحمان گل کا ملازم ہے ۔ خدشہ ہے اس قسم کی جعلسازی و غیر قانونی طریقے سے جاپان میں داخل ہونے والے کئی غیر ملکی افراد امیگریشن کی حراست میں ہیں اور ان سے سخت تفتیش کی جارہی ہے۔دنیاانٹرنیشنل کو موصول مصدقہ اطلاعات کے مطابق اس وقت کئی پاکستانی جاپان واپس آنے کی خاطر نام نہاد ٹریول ایجنٹوں کے چکرمیں پھنس کر اپنا پیسہ اور قیمتی وقت برباد کرچکے ہیں ، اسلام آباد سے ہمارے نامہ نگار کے مطابق پشاور میں ایک مقامی ٹریول ایجنٹ براستہ کابل ، استنبول اور بشکیک کرغستان جاپان پہنچانے کا جھانسہ دے کر اب تک کئی پاکستانیوں کو ڈی پورٹ کراچکا ہے۔ بعدازاں کابل میں پھنس جانے والے پاکستانیوں میں سے 8 افراد نے دنیا انٹرنیشنل سے رابطہ کیا جنکی بھرپور مدد اور رہنمائی کی گئی  اور انہیں دنیا ٹریول کے تعاون سے جاپانی قوانین کے مطابق جاپان پہنچایا گیا ۔ تازہترین اطلاعات کے مطابق پاکستانی وزارت خارجہ و داخلہ و سفارتخانہ ٹوکیو سمیت پاکستانی سکیورٹی ادارے FIA نے کل ہونے والے واقعہ کے سلسلہ میں تحقیقات شروع کردی ہیں ۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here