پی ٹی آئی کے اہم رہنما عون چوہدری معاون خصوصی پنجاب کے عہدے سے مستعفیٰ

0
104

وزیراعظم عمران خان کے قریبی دوست اور وزیراعلی پنجاب کے معاون خصوصی برائے سیاسی امور عوان چوہدری نے عہدہ چھوڑ دیا۔

 وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار سے ان کے معاون خصوصی برائے سیاسی امور  وزیراعظم عمران خان کے قریبی دوست عوان چوہدری نے ملاقات کی، ملاقات میں ہی عون چوہدری نے اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا۔عون چوہدری نے تحریری استعفی وزیر اعلی کو پیش کردیا جس میں انہوں نے نیا پنڈورا باکس کھول دیا اور کہا کہ مجھے آج وزیراعلی آفس بلاکر ترین گروپ سے علیحدہ ہونے کا کہا گیا، لیکن میں نے انکار کردیا، میرے ترین گروپ سے علیحدگی سے انکار پر مجھے اپنے عہدے سے مستعفی ہونے کا کہا گیا، جس پر میں نے وزیراعلیٰ پنجاب کو اپنا استعفیٰ پیش کردیا۔عون چوہدری کا کہنا تھا کہ سب جانتے ہیں کہ جہانگیر ترین کی پارٹی کے لیے کیا خدمات ہیں، 2018 کے الیکشن میں تحریک انصاف کی حکومت جہانگیر ترین کی خدمات کے باعث ہی بنی، مجھے خدمات کا یہ صلہ دیا گیا کہ جب عمران خان نے حلف اٹھایا تو مجھے میری ذمہ داریوں سے سبکدوش کر دیا گیا، اب میں اپنے عہدے سے مستعفی ہوتا ہوں لیکن ترین گروپ نہیں چھوڑوں گا۔دوسری جانب عون چوہدری کے استعفے ترین گروپ کا سخت ردعمل سامنے آگیا ہے، گروپ کے اہم رہنما راجا ریاض نے کہا ہے کہ عون چوہدری کی جرات اور بہادری کو سلام پیش کرتے ہیں، ہم سے بھی استعفے مانگے تو دے دیں گے لیکن جہانگیر ترین کو نہیں چھوڑیں گے۔راجا ریاض نے مزید کہا کہ آئندہ چند روز میں ساری صورت حال پر مشترکہ فیصلہ کریں گے، اس طرح دباو ڈال کر استعفے لینے سے پارٹی کو نقصان پہنچ سکتا ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here