منرولائٹ کورونا سے بچاؤ اور علاج کی موثر ترین دوا ہے‘ڈاکٹر جان عالم

0
290

”منرولائٹ“کوپاکستان بھر میں متعارف کروائے جانے کے بعد اب ”منرولائٹ“کو پنجاب اور وفاقی حکومتی سطح پر بھی متعارف کروائے جانے کے سلسلے کا آغاز کر دیاگیا

پاکستانی نژاد امریکن بزنس مین ضرغام عابد کی کمپنی ”بگٹرنکس انک نیویارک‘ یو ایس اے“ کی جانب سے ”منرولائٹ“ کی گلوبل ڈسٹری بیوشن حاصل کر لی گئی ہے‘ اس سلسلے میں ڈاکٹر جان عالم کی کمپنی اور ”بگٹرنکس انک نیویارک‘ یو ایس اے“ میں معاہدہ پر دستخط ہو گئے

گورنرپنجاب چوہدری محمد سرور سے ملاقات کے بعد ضرغام عابد‘ ڈاکٹر جان عالم کی نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف ہیلتھ اسلام آباد کے چیئرمین میجر جنرل عامر اکرام سے اہم ملاقات ہوئی‘ ڈاکٹر جان عالم نے ”منرولائٹ“ پراڈکٹس اور ان کی افادیت کے بارے انہیں بتایا

نیویارک (خصوصی رپورٹ)پاکستان کے شہر آفاق‘ یورپین ایوارڈ یافتہ‘ ماہر سائنسدان ڈاکٹر جان عالم کی جانب سے کورونا بیماری سے بچاؤ اور علاج کی موثر ترین دوا ”منرولائٹ“کوپاکستان بھر میں متعارف کروائے جانے کے بعد اب ”منرولائٹ“کو پنجاب اور وفاقی حکومتی سطح پر بھی متعارف کروائے جانے کے سلسلے کا آغاز کر دیاگیاہے۔دریں اثناء پاکستانی نژاد امریکن بزنس مین ضرغام عابد کی کمپنی ”بگٹرنکس انک نیویارک‘ یو ایس اے“ کی جانب سے ”منرولائٹ“ کی گلوبل ڈسٹری بیوشن حاصل کر لی گئی ہے اور اس سلسلے میں ڈاکٹر جان عالم کی کمپنی اور ”بگٹرنکس انک نیویارک‘ یو ایس اے“ میں معاہدہ پر دستخط ہو گئے ہیں پاکستان کے عالمی شہرت یافتہ ایوارڈ یافتہ ومعروف گلوکار وارث بیگ ”بگٹرنکس انک نیویارک‘ یو ایس اے“ کے برانڈ ایمبیسڈر کے طور پر اپنا کردار ادا کررہے ہیں۔ڈاکٹر جان عالم کے ساتھ ”منرولائٹ“ کی گلوبل ڈسٹری بیوشن کے معاہدے پر دستخط کے بعد ”بگٹرنکس انک نیویارک‘ یو ایس اے“ کے چیف ایگزیکٹو آفیسر ضرغام عابدخصوصی دورے پر پاکستان پہنچے جہاں انہوں نے لاہور اور اسلام آباد میں ڈاکٹر جان عالم کے ہمراہ اہم شخصیات سے ملاقاتیں کیں۔ضرغام عابد اور ڈاکٹر جان عالم کی پہلی ملاقات گورنر ہاؤس پنجاب میں گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور سے ہوئی جہاں گورنر پنجاب کی جانب سے پاکستان کے فارما سیوٹیکل انڈسٹری کی بڑی کمپنیوں کے سربراہان کو خصوصی طور پر مدعو کیا گیاتھا اس ملاقات میں ڈاکٹر جان عالم نے پہلے گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور کو ”منرولائٹ“کے بارے میں پریزنٹیشن دی اور پھر میٹنگ میں موجود فارماسیوٹیکل انڈسٹریز کے قائدین کو بھی بریف کیا اور ”منرولائٹ“ کی تمام پراڈکٹس انہیں دکھائیں اور بتایا کہ انہیں کیسے استعمال کیا جاتا ہے اور کیسے اس کے استعمال سے کورونا کے مرض میں مبتلا مریضوں کو حیرت انگیز طو رپر اللہ تعالی شفاء نصیب فرما رہے ہیں۔ گورنر چوہدری محمد سرور سے ملاقات کے بعد ضرغام عابد‘ ڈاکٹر جان عالم کی نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف ہیلتھ اسلام آباد کے چیئرمین میجر جنرل عامر اکرام سے ان کے دفتر میں اہم ملاقات ہوئی۔ اس ملاقات میں بھی ڈاکٹر جان عالم نے ”منرولائٹ“ پراڈکٹس اور ان کی افادیت کے بارے میں تفصیلات بیان کیں اور ”منرولائٹ“ پراڈکٹ کے استعمال‘اثرات اور فائدوں کے بارے میں بتایا۔ڈاکٹر جان عالم اور ضرغام عابد کا کہنا ہے کہ گورنر پنجا ب چوہدری محمد سرور‘فارماسیوٹیکل انڈسٹریز کے قائدین کے بعد این آئی ایچ کے سربراہ سے ملاقات کا مقصد سرکاری سطح پر ”منرولائٹ“کو متعارف کروانا ہے۔انہوں نے کہا کہ گورنمنٹ جب خود ”منرولائٹ“کو کورونا مرض میں مبتلا مریضوں کے علاج کے لئے استعمال کرے گی تو لوگوں کا اور دنیا کا اس پر اعتماد قائم ہو گا‘ مقامی لوگ اور دنیا اسے بڑی تعداد میں خریدے گی جس سے ملک کثیر زرمبادلہ بھی کما سکتا ہے۔ڈاکٹر جان عالم کا کہنا ہے کہ ”منرولائٹ“دی آئی آرسلوشن‘ففتھ جنریشن دوا ہے جو ہر قسم کی شدید وائرل اور بیکٹیریل انفیکشن کو م کمل طور پر ختم کرتی ہے۔یہ مندرجہ ذیل علامات میں استعمال کی جاتی ہے۔ انفلوئنا اور کورونا وائرس‘ سانس لینے میں دشواری‘ خشک کھانسی‘ نمونیہ‘ بات‘ حرکت کرنے میں دشواری‘ چھاتی کا درد‘ جکڑن‘ حلق کی سوجن‘ موسمی الرجی‘ ڈائریا‘ معدے کا السر اور تیزابیت۔ڈاکٹر عالم کا کہنا ہے کہ ”منرولائٹ“وی آئی آر سلوشن کے کورونا مریضوں کی جانب سے استعمال کے بعد حیرت انگیز نتائج سامنے آئے ہیں اور اللہ تعالی کے فضل وکرم سے بہت سے مریضوں کو شفاء نصیب ہوئی ہے۔انہوں نے کہا کہ وہ ”منرولائٹ“ وی آئی آر سلوشن پر ایک عرصے سے کام کررہے تھے۔ ”منرولائٹ“وی آئی آر سلون کی خوراک کا تعین ہر شخص میں پائی جانے والی علامات کی شدت کو دیکھ کر کیا جاتا ہے عام طور پر اسے تین سے چارگھنٹے کے بعد استعمال کیا جاتا ہے کورونا کے مریض ہر دو گھنٹے کے بعد نیبولائز کریں‘ اس دوا کو پندرہ ملی میٹر ون میں دو بارپی بھی سکتے ہیں۔نیبولائزنگ سالوشن تین سے چار ملی لیٹر ہر دو گھنٹے بعد کورونا مریض نیبولائز کریں جبکہ سپرے سلوشن کو تمام چہرے‘آنکھوں‘ ناک‘ منہ میں حسب ضرورت استعمال کیا جاسکتا ہے۔اس دوا کی تیاری پاکستان میں ڈاکٹر عالم فارماسیوٹیکل پرائیویٹ لمیٹڈ کے زیر اہتمام کی جارہی ہے۔ڈاکٹر جان عالم اور ضرغام عابد کا کہنا ہے کہ پاکستان میں ”منرولائٹ“ وی آئی آر سلوشن کے حوالے سے ہونے والی ملاقاتیں نہایت ہی حوصلہ افزاء ہیں۔انہوں نے کہا کہ جتنا دنیا کو اور لوگوں کو ”منرولائٹ“وی آئی آر سلوشن کے بارے میں علم ہو گا اتنا ہی وہ اس کی افادیت اور اہمیت کا احساس کریں گے اور ایک وقت پر کہ جب پوری دنیا کورونا وبا کی لپیٹ میں ہے۔ ”منرولائٹ“ وی آئی آرسلون ایک گیم چینجر ثابت ہو سکتی ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here