جعفریہ کونسل آف یو ایس اے کی جانب سے پرتکلف عشائیہ

0
425

بروکلین‘ نیویارک (منظور حسین سے):___امریکی سرزمین پر اعزاداری کے جلوسوں کو دوام بخشنے والی شخصیت جعفریہ کونسل آف یو ایس اے کے روح رواں ممتاز پاکستانی امریکن بزنس مین راجہ عابد اوران کے نوجوان صاحبزادے راجہ عمار یاسر نمبردار کی جانب سے نیویارک کے پرنٹ اور الیکٹرانک میڈیا کے اعزاز میں خوبصورت ڈنر

یوں تو راجہ عابد ہمیشہ عاجزی او رانکساری کے ساتھ بروکلین میں واقعہ اہل تشیع کے سب سے متحرک اسلامی مرکز المہدی سنٹر میں دینی‘ مذہبی محافل اور مجالس میں پیش پیش نظر آتے ہیں جبکہ جعفریہ کونسل آف یو ایس اے کے زیر انتظام کیپٹل آف دا ورلڈ مین ہیٹن اورفلیشنگ میں واقعہ کسینہ بلیورڈ میں اعزاداری کے ہونے والے جلوسوں کی قیادت کرتے بھی نظر آتے ہیں مگر ان کی شخصیت کا ایک رخ یہ بھی ہے کہ وہ پاکستان کے تہذیبی اور ثقافتی علاقے منڈی بہاؤالدین کے سیاسی گھرانے سے تعلق رکھتے ہیں جبکہ ان کا تعلق راول جگنی کے شہر راولپنڈی سے بھی ہے

گزشتہ دنوں نیویارک قونصلیٹ کے سامنے ہونے والے ہزارہ کمیونٹی کے حق میں ہونے والے احتجاجی مظاہرے کی کامیابی اور مقامی میڈیا کی جانب سے اس احتجاجی مظاہرے کو بہترین کوریج دینے اور دنیا بھر میں بے گناہ ہزارہ کمیونٹی کا پیغام پہنچانے پر راجہ عابد نے مقامی میڈیا کیلئے پر تکلف اعشائیے کا اہتمام کیا جس میں پاک وطن ٹی وی کے کہنہ مشق صحافی سیدزاہد شہباز‘نیوز پاکستان کے ایڈیٹر مجیب لودھی‘اردو نیوز کے محسن ظہیر‘ ویکلی آواز کے فرخ‘ہفت روزہ دنیا انٹرنیشنل کے ایگزیکٹو ایڈیٹر منظور حسین‘ گلوبل ٹی وی کے پروڈیوسر عبدالصمد خان اور مقامی کمیونٹی رہنماء راجہ احسن نے شرکت کی-اس موقع پر راجہ عابد نے مقامی میڈیا کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ صحافت ایک عظیم شعبہ ہے اور اس سے منسلک تمام صحافی ان کے لئے قابل احترام ہیں -انہوں نے کہا کہ صحافت کے اعلی اقدار کی ترجمانی کرتے ہوئے صحافیوں کو ہمیشہ مثبت خبروں کو جگہ دینی چاہئے اور منفی خبروں کو پس پشت ڈال دینا چاہئے تاکہ کمیونٹی میں اضطراب پیدا نہ ہو اور ہماری کمیونٹی اور ہماری نئی نسل امریکہ میں پھلے پھولے

یاد رہے کہ ہزارہ کمیونٹی کے حق میں قونصلیٹ کے سامنے کئے جانے والے احتجاجی مظاہرے کی کامیابی کا تمام تر سہرا جعفریہ یوتھ آف نیویارک کے نوجوان صدر راجہ عمار یاسر نمبردار اور ان کی نوجوان ٹیم کے سر ہے کہ جنہوں نے سخت سردی اورکورونا وائرس وباء کی پرواہ کئے بغیرقلیل مدت میں اتنے بڑے مظاہرے کا اہتمام کیا جس کی بازگشت پوری دنیا میں سنی گئی

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here