برطانیہ کے بعد جنوبی افریقہ سے آنے والے مسافروں پر پابندیوں میں سختی

0
205

ٹوکیو:___حکومت جاپان نے جنوبی افریقہ سے آنے والے مسافروں کے جاپان میں داخلے کے ضوابط سخت کر دیے ہیں۔ وہاں کورونا وائرس کی نئی تبدیل شدہ قسم پائی گئی ہے۔جاپان نے ہفتے کے روز سے جنوبی افریقہ سے آنے والے مسافروں کو داخلے کی اجازت نہ دینے کا آغاز کر دیا۔ جاپانی شہریوں اور جاپان میں مقیم غیر ملکیوں کو جاپان داخلے کی اجازت ہو گی۔ تاہم انہیں جاپان میں داخلے کے بعد اپنے آپ کو 14 دن کے لیے قرنطینہ میں رکھنے کا کہا جا رہا ہے۔جنوبی افریقہ سے لوٹنے والے جاپانی شہریوں سے کہا جا رہا ہے کہ وہ روانگی سے 72 گھنٹے قبل کے دورانیے میں کورونا ٹیسٹ کا نتیجہ منفی ہونے کا ثبوت فراہم کریں۔ جاپان میں رہائش کا اسٹیٹس رکھنے والے غیر ملکیوں کو پہلے ہی سے ایسا کرنے کا کہا جا رہا ہے۔برطانیہ سے آنے والے مسافروں پر بھی ایسی ہی پابندیاں عائد ہیں جہاں وائرس کی ایک اور تبدیل شدہ قسم پھیل رہی ہے۔جاپان نے جمعے کو تصدیق کی تھی کہ برطانیہ سے آنے والے 5 افراد وائرس کی نئی قسم سے متاثر ہوئے ہیں۔ وہ 18 سے 21 دسمبر کے درمیان کسی وقت جاپان میں داخل ہوئے تھے۔جاپان کی وزارت صحت کے مطابق اسے یقین ہے کہ ان 5 افراد کی وجہ سے وائرس جاپان میں نہیں پھیلا ہے کیونکہ ہوائی اڈے پر صحت معائنوں کے دوران انکا ٹیسٹ مثبت آنے پر انہیں ہوٹلوں میں قرنطینہ میں رکھا جا چکا ہے۔جاپانی حکام نے اس بات کا تعین کرنے کے لیے طریقۂ عمل تیز کر دیا ہے کہ کیا ہوائی اڈوں پر آنے والے ایسے افراد جو حال ہی میں برطانیہ میں رہے ہوں، وائرس کی نئی قسم سے متاثر تو نہیں ہوئے ہیں۔ وہ ہوائی اڈوں پر جمع کیے جانے والے نمونوں کو تجزیے کے لیے جلد از جلد قومی ادارہ برائے متعدی امراض میں پہنچانے کے انتظامات کر رہے ہیں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here