اپوزیشن استعفے دے ورنہ ڈرامے بازی بند کرے، شاہ محمود قریشی

0
73

ملتان: وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ اپوزیشن کے استعفے 31 دسمبر تک اسپیکر تک پہنچ جانے چاہئیں، استعفے نہیں پہنچتے تو یہ ڈرامے بازی بند کی جائے۔

ملتان میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے شاہ محمود قریشی کا کہا کہ اپوزیشن نے فیٹف قانون سازی پر نیب قوانین میں ترامیم کا مطالبہ کیا، اس مطالبے کا مطلب این آراو تھا، یہ اقدام (ن) لیگ اور پیپلزپارٹی نے اپنے ادوار میں کیوں نہیں کیے، آپ نے نیب میں ترامیم نہیں کیں تو یہ غفلت آپ کی ہے، یہ ذاتی ایجنڈا تھا جس پر وہ سودا کرنا چاہتے تھے، نیب ترامیم کو فیٹف کے ساتھ نہ جوڑیں یہ قومی اہمیت کامعاملہ ہے، برملا کہہ رہا ہوں نیب میں بہتری کی گنجائش ہے لیکن سودا نہیں کریں گے۔اہ محمود قریشی نے کہا کہ اپوزیشن والے جس ایشو پر بات کرنا چاہتے ہیں ہم تیار ہیں، آپ آنا چاہتے ہیں تو آیئے آپ کی خاطر خدمت کریں گے، لیکن اس خاطر خدمت کا مطلب کھانا پینا ہے، اپوزیشن سے قومی ایشوز پر بات ہو سکتی ہے لیکن مقدمات پر بات نہیں ہوگی، جو مرضی دباؤ ڈال لیں ہم اپنے مؤقف پر قائم رہیں گے، یہ دریا اترتے چڑھتے دیکھے ہیں، کرسیاں آتی جاتی دیکھی ہیں، اپوزیشن والے استعفے دینا چاہتے ہیں تو شوق پورا کرلیں، اور اگر آپ لانگ مارچ کرنا چاہتے ہیں تو وہ بھی ضرور کریں،  ہم استعفوں اور مارچ کی دھمکیوں سے ڈرنےو الے نہیں،  31 دسمبر تک آپ کے استعفے اسپیکر تک پہنچنے چاہئیں، اگر نہیں پہنچتے تو یہ ڈرامے بازی بند کی جائے۔وزیرخارجہ کا کہنا تھا کہ اپوزیشن جو بیانیہ لے کر چل رہی ہے اس میں (ن) لیگ اور جے یو آئی پوری طرح متفق نہیں، استعفوں کے معاملے پر اپوزیشن جماعتیں تقسیم ہیں، پیپلزپارٹی میں بااختیار کوئی اور ہے اور دکھاوے والا کوئی اور ہے، آج  بھی ان کے فیصلے آصف زرداری کرتے ہیں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here