پاکستان میں نئی ایئر لائن‘ ایئر سیال کی رواں ماہ سے پروازیں

0
138

فضائی آپریشن کا آغاز دسمبر کے تیسرے ہفتے میں متوقع‘ جلد باقائدہ اعلان کر دیا جائیگا جس کے بعد ٹکٹس کی فروخت کا آغاز کر دیا جائیگا
ائیر سیال کے فلیٹ میں تین آئیر بس اے 320-200 شامل ہیں، جس میں 180 مسافروں کے بیٹھنے کی گنجائش ہے‘ڈائریکٹر آپریشنز

اسلام آباد(صفدرحسین سے):__ پاکستان کی وفاقی کابینہ نے نجی ائیر لائن ایئر سیال کے لائسنس کی منظوری دیدی۔ کابینہ نے نجی ایئر لائن ایئر سیال کے لائسنس کی باضابطہ منظوری دے دی ہے جس کے بعد اندرون ملک پروازوں کا آغاز رواں ماہ سے کر دیا جائے گا۔ ابتدائی طور پر اسلام آباد، کراچی، لاہور، سیالکوٹ اور پشاور کے درمیان آپریشنز کا آغاز کیا جائے گا۔ ایئر سیال کے ڈائیریکٹر آپریشنز سہیل سرور نے بتایا کہ ایئر سیال کے فضائی آپریشن کا آغاز دسمبر کے تیسرے ہفتے میں متوقع ہے جس کا جلد باقائدہ اعلان کر دیا جائے گا جس کے بعد ٹکٹس کی فروخت کا آغاز کر دیا جائے گا۔انہوں نے امید ظاہر کی کہ جلد ایئر سیال بیرون ملک فضائی آپریشن کا آغاز بھی کر دے گی۔ائیر سیال کے فلیٹ میں تین آئیر بس اے 320-200 شامل ہیں، جس میں 180 مسافروں کے بیٹھنے کی گنجائش ہے۔ سیالکوٹ انٹرنیشنل ایئر پورٹ کے کامیاب منصوبے کے بعد سیالکوٹ چیمبر آف کامرس کے ممبران نے 2015 میں فضائی کمپنی ایئر سیال کے منصوبے کا آغاز کیا تھا۔ ائیر سیال کے فلیٹ میں تین آئیر بس اے 320-200 شامل ہیں، جس میں 180 مسافروں کے بیٹھنے کی گنجائش ہے۔ نجی کمپنی نے رواں سال جون میں اپنے فضائی سروس کے آغاز کا اعلان کیا تھا، تاہم کورونا وائرس کے باعث سفری پابندیوں اور ایوی ایشن انڈسٹری کے لیے ناموافق حالات کے باعث منصوبہ تاخیر کا شکار ہوا۔ فضائی کمپنی کے بیڑے میں شامل تین جہاز اتوار کو سیالکوٹ پہنچ چکے ہیں۔ وفاقی کابینہ نے کورونا وائرس کی ویکسین کی خرداری کے لیے 15 کروڑ ڈالر مختص کرنے کی منظوری دیتے ہوئے پہلے مرحلے میں ہیلتھ کیئر ورکرز اور 65 سال سے زائد عمر، ذیابطیس اور کینسر کے مریضوں کو ابتدائی طور پر وائرس کی ویکسین کی فراہمی کا فیصلہ کیا ہے۔ کابینہ کے ایک رکن نے نام نہ ظاہر کرنے کی شرط پر بتایا ہے کہ کابینہ اجلاس میں فرانس سے سفارتی تعلقات کے معاملے پر کابینہ نے کوئی حتمی فیصلہ نہیں کیا جس کے بعد ایجنڈا آئندہ اجلاس تک موخر کر دیا گیا۔کابینہ نے سٹیل ملز ملازمین کو گولڈن ہینڈ شیک دینے اور سٹیل مل کی نجکاری کی منظوری دیدی ہے۔ کابینہ نے نیشنل انسٹیوٹ آف ہیلتھ کے ایگزیکٹو ڈائیریکٹر کی مدت ملازمت میں توسیع کی بھی منظوری دیدی ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here