یونیسیف کی جانب سے حکومتوں پر اسکول دوبارہ کھولنے کیلئے زور

0
163

اقوام متحدہ کے فنڈ برائے اطفال، یونیسف نے حکومتوں پر زور دیا ہے کہ وہ اسکولوں کو دوبارہ کھولنے کو ترجیح دیں۔ اس کا کہنا ہے کہ اس ثبوت کے باوجود کہ اسکول کورونا وائرس انفیکشن پھیلانے کی بڑی وجہ نہیں ہیں، اسکول کی بندش کا سامنا کرنے والے بچوں کی تعداد میں اضافہ ہو رہا ہے۔اقوام متحدہ کے اس ادارے کے مطابق یکم دسمبر تک دنیا بھر میں اسکول جانے والے ہر پانچ میں سے تقریباً ایک بچہ یا 32 کروڑ بچوں کی کلاسیں بند تھیں۔ یہ ایک ماہ میں تقریباً 9 کروڑ طلباء کا اضافہ ہے۔یونیسیف نے کہا ہے کہ 191 ممالک کا ڈیٹا استعمال کرتے ہوئے ایک حالیہ جائزے سے معلوم ہوا ہے کہ اسکول کی صورتحال اور علاقے میں کووِڈ 19 انفیکشن کی شرح میں کوئی تعلق نہیں ہے۔ اس کا مزید کہنا ہے کہ اس بات کا ثبوت معمولی ہے کہ اسکولوں کی وجہ سے انفیکشن کے پھیلاؤ میں اضافہ ہوتا ہے۔یونیسیف کا کہنا ہے کہ بظاہر بہت زیادہ اسکولوں کو غیر ضروری طور پر بند کیا جا رہا ہے۔ یہ ادارہ حکومتوں پر زور دے رہا ہے کہ اسکول دوبارہ کھولنے کو ترجیح دی جائے اور انہیں محفوظ بنانے کیلئے تمام ممکنہ اقدامات کیے جائیں۔یونیسیف کے عالمی سربراہ برائے تعلیم، رابرٹ جینکنز نے کہا “ہم ایک پریشان کن رجحان دیکھ رہے ہیں کہ حکومتیں ایک بار پھر اسکولوں کو آخری عمل کے بجائے پہلی تدبیر کے طور پر بند کر رہی ہیں”۔اُنہوں نے مزید کہا کہ بچوں کا اپنی تعلیم، ذہنی و جسمانی صحت اور حفاظت پر تباہ کن اثرات سے متاثر ہونا جاری ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here