ٹرمپ کے لیے آسانی سے شکست قبول کرنا آسان نہیں. سابق اہلیہ

0
147

نیویارک:___ امریکی صدارتی انتخابات میں شکست کا سامنا کرنے والے امریکی صدر 74 سالہ ڈونلڈ ٹرمپ کی سابق اہلیہ و سابق ماڈل 71 سالہ ایوانا ٹرمپ نے کہا ہے کہ ان کے سابق شوہر ضدی ہیں، وہ ہار نہیں مانیں گے. امریکی جریدے سے انٹرویو میں ایوانا ٹرمپ نے کہاکہ وہ امریکی انتخابات میں سابق شوہر کی شکست کو تسلیم کر چکی ہیں اور وہ چاہتی ہیں کہ ہار اور جیت کا یہ کھیل ہوجائے انہوں نے بتایا کہ وہ ڈونلڈ ٹرمپ کو جانتی ہیں، وہ ضدی ہیں، وہ کبھی بھی اپنی شکست تسلیم نہیں کرتے.ایوانا ٹرمپ کے مطابق ڈونلڈ ٹرمپ آسانی سے اپنی شکست کو نہ تو تسلیم کریں گے اور نہ ہی وہ ہار مانیں گے بلکہ وہ ہارنے کے باوجود اپنی جیت کے لیے لڑیں گے انہوں نے اس بات پر اطمینان کا اظہار کیا کہ ڈونلڈ ٹرمپ ہار گئے اور ان کے تینوں بچے قید و انتہائی سخت سیکیورٹی کی زندگی آزاد ہوگئے. انہوں نے کہا وہ اس بات پر خوش ہیں کہ اب ان کے تمام بچے عام امریکی افراد کی طرح زندگی گزاریں گے خیال رہے کہ ایوانا ٹرمپ ماضی کی مقبول ماڈل ہیں اور وہ ماضی میں پلے بوائے جیسے میگزین کے لیے بھی فوٹوشوٹ کروا چکی ہیں.ایوانا ٹرمپ نے 1977 میں ڈونلڈ ٹرمپ سے شادی کی تھی اور دونوں کے درمیان 15 سال بعد 1992 میں طلاق ہوگئی تھی ڈونلڈ ٹرمپ کو تینوں بڑے بچے ایوانا ٹرمپ سے ہوئے جن میں ڈونلڈ ٹرمپ جونیئر، ایونکا ٹرمپ اور ایرک ٹرمپ شامل ہیں ایوانا ٹرمپ نے ڈونلڈ ٹرمپ سے دوسری شادی کی تھی، وہ اس سے قبل بھی ایک شادی کر چکی تھیں. ڈونلڈ ٹرمپ سے طلاق کے بعد بھی ایوانا ٹرمپ نے مزید دو شادیاں کیں، جن میں سے ان کی تیسری شادی بھی طلاق پر ختم ہوئی تھی دلچسپ بات یہ ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ سے طلاق کے باوجود ایوانا ٹرمپ اب بھی ٹرمپ آرگنائزیشن کی نائب صدر ہیں اور وہ کئی اہم کاروباری عہدوں پر براجمان ہیںان کے تمام بچے اگرچہ ان کے زیادہ قریب نہیں ہیں، تاہم وہ ان سے ملتے رہتے ہیں.

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here