جاپان آنے والے بعض مسافروں کو قرنطینہ سے استثنیٰ دینے پر غور

0
628
جاپانی حکومت بیرون ممالک سے واپس آنے والے جاپانی کاروباری مسافروں اور رہائشی حیثیت کے حامل غیر ملکی شہریوں کے لئے 14 دن کے قرنطینہ کی شرط ختم کرنے پر غور کر رہی ہے۔کورونا وائرس کی عالمگیر وبا کی وجہ سے، ملک میں داخلے پر عائد ابندیوں میں نرمی لانے کے ایک اقدام کے طور پر عہدیدار جلد سے جلد اسی ماہ فیصلہ کرنے کا ارادہ کر رہے ہیں۔لوگوں کو یہ سہولت کچھ شرائط کے تحت اور ابتدائی طور پر محدود تعداد میں دی جائے گی۔عہدیدار بیرون ملک سے واپس آنے والوں پر جاپان میں اپنی مصروفیات کی تفصیل جمع کرانے کی شرط عائد کرنے والے ہیں۔ واپس آنے والوں سے یہ بھی کہا جائے گا کہ داخلے کے بعد 14 دن تک عوامی ٹرانسپورٹ کا استعمال نہ کریں۔جاپان نے وسط اور طویل مدتی قیام کے اہل غیر ملکی شہریوں کے لئے رواں ماہ کے اوائل میں اس شرط پر داخلے کی پابندی میں نرمی کی تھی کہ وہ دو ہفتوں تک قرنطینہ میں رہیں گے۔ اس نے جنوبی کوریا اور سنگاپور کے ساتھ کاروباری سفر بھی بحال کر دیا ہے۔جاپان نے فی الحال 159 ممالک اور علاقوں کے لئے متعدی بیماری کے انتباہ کو تیسرے درجے پر رکھا ہے جس کا مطلب ہے کہ جاپانی شہریوں کو ان ممالک کے ’’ہر قسم کے سفر سے گریز‘‘ کرنا چاہئے۔عہدیدار ان میں سے بعض ممالک اور علاقوں کے لئے انتباہ کی سطح کو کم کر کے دو کرنے پر غور کر رہے ہیں جس کا مطلب ہے کہ ’’غیر ضروری سفر سے گریز کریں‘‘۔ ان ممالک اور علاقوں کے لوگوں کے لئے داخلے پر پابندی ختم کرنے کا بھی منصوبہ ہے۔ وہ امید کر رہے ہیں کہ ہوائی اڈوں پر وائرس ٹیسٹ کی تعداد بڑھاتے ہوئے پابندیوں میں نرمی لائی جائے تاکہ باہمی دورے بحال ہوں اور معیشت رواں دواں ہو۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here