ٹرمپ ہٹلر کے پروپیگنڈا وزیر جوزف گوئبلز جیسے ہیں‘ جو بائیڈن

0
235
 الیکشن سے قبل دونوں سیاستدانوں کے مابین ٹیلی وژن پر تین مباحثے ہوں گے
نیویارک:(مانیٹرنگ ڈیسک)نومبر کے امریکی صدارتی الیکشن سے قبل ایک لائیو ٹی وی مباحثے سے پہلے ڈیموکریٹ صدارتی امیدوار جو بائیڈن نے موجودہ صدر اور اپنے ریپبلکن حریف ٹرمپ کو جھوٹ بولتے رہنے کے باعث ہٹلر کے پروپیگنڈا وزیر گوئبلز جیسا قرار دیا ہے۔ڈونلڈ ٹرمپ کے صدر بننے کے بعد سے امریکی خارجہ سیاست کے ساتھ ساتھ داخلی سیاست میں بھی لہجوں کی کتنی تبدیلیاں آ چکی ہیں، اس کا اندازہ ایک ایسے بیان سے لگایا جا سکتا ہے جو سابق امریکی نائب صدر جو بائیڈن نے موجودہ صدر اور اپنے انتخابی حریف ڈونلڈ ٹرمپ کے بارے میں دیا ہے۔اس سال تین نومبر کو ہونے والے صدارتی الیکشن میں ڈیموکریٹ بائیڈن اور ریپبلکن ٹرمپ دو مرکزی امیدواروں کے طور پر ایک دوسرے کے خلاف میدان میں ہیں۔ اس الیکشن سے قبل ان دونوں سیاستدانوں کے مابین ٹیلی وژن پر تین مباحثے ہوں گے، جن کو کئی ملین امریکی ووٹر براہ راست دیکھیں گے۔جوبائیڈن نے اپنے ایک انٹرویو میں کہاکہ مجھے توقع ہے کہ پہلے مباحثے میں ڈونلڈ ٹرمپ مجھ پر ذاتی حملے بھی کریں گے اور جھوٹ بھی بولیں گے۔یہ کہتے ہوئے جو بائیڈن نے ٹرمپ کا موازنہ نازی جرمن رہنما اڈولف ہٹلر کے پروپیگنڈا وزیر جوزف گوئبلز کے ساتھ کیا۔ بائیڈن نے اس ٹیلی وژن بحث کے بارے میں کہاکہ یہ ایک مشکل بحث ہو گی۔ میرا اندازہ ہے کہ وہ سیدھے سیدھے ذاتی حملوں پر اتر آئیں گے۔ وہ بس یہی کام کرنا جانتے ہیں کہ کسی پر ذاتی حملے کیسے کیے جاتے ہیں۔ جو بائیڈن نے دعویٰ کیاکہ ٹرمپ حقائق کی بنیاد پر بحث کرنا نہیں جانتے۔ وہ اتنے ہوشیار نہیں ہیں۔ انہیں خارجہ پالیسی کا بھی زیادہ علم نہیں۔ انہیں تو داخلی سیاسی پالیسیوں کا بھی زیادہ پتا نہیں ہے۔ وہ اس بات سے بیخبر ہیں کہ کسی معاملے کی تفصیل کیا اور کتنی اہم ہوتی ہے؟

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here