مقبوضہ کشمیر: بھارتی فورسز کی محرم الحرام کے جلوس پر پیلٹ گن سے فائرنگ

0
73

محرم الحرام کے دوران مذہبی جلوسوں اور مجالس پر پابندیاں قابلِ مذمت ہے۔ دفتر خارجہ

سرینگر: مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فورسز کی محرم الحرام کے جلوس نکانے والے عزاداروں پر پیلٹ گن (آہنی جھرے فائر کرنے والی بندوق) اور آنسو گیس کی فائرنگ کے نتیجے میں 40 افراد زخمی ہوگئے۔ عینی شاہدین کے مطابق وادی میں مذہبی اجتماعات پر عائد پابندی کو نظر انداز کرنے والے درجنوں افراد بھارتی فورسز کی پیلٹ گن سے زخمی ہوگئے۔ محرم الحرام کے مقدس مہینے میں روایتی جلوس نکالنے کے خواہاں مسلمانوں کے ساتھ جھڑپوں کے بعد بھارتی حکام نے جمعرات کو مذہبی اجتماعات پر پابندی دوبارہ نافذ کردی تھی۔ عینی شاہد جعفر علی نے بتایا کہ جلوس سری نگر کے نواح میں واقع بییمینا کے علاقے میں شروع ہوا تھا جہاں بھارتی فورس کی بھاری تعداد میں موجود تھی۔ جھڑپ دیکھنے والے جعفر علی اور دیگر لوگوں نے بتایا کہ سیکیورٹی فورسز نے اجتماع کو توڑنے کے لیے پیلٹ اور آنسو گیس فائر کیے۔ ایک اور عینی شاہد گواہ اقبال احمد نے بتایا کہ فورسز نے پرامن جلوس پر چھرے فائر کیے جس میں خواتین بھی شامل تھیں۔ انہوں نے بتایا کہ بھارتی فورسز کی پیلٹ گن کی فائرنگ سے کم از کم 40 افراد زخمی ہوئے ہیں۔ ایک ڈاکٹر نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ پیلٹ گن کےتقریباً 25 متاثرہ افراد قریبی کلینک میں لے جایا گیا تھا ان میں سے کچھ کے چہرے اور جسم پر گولیوں کے نشانات تھے۔ ڈاکٹر نے کہا کہ ہم ایک درجن کے قریب افراد کو بہتر علاج کے لیے دوسرے شعبے میں منتقل کر چکے ہیں۔ واضح رہے کہ پاکستان نے مقبوضہ کشمیر میں کشمیریوں کے فرضی جھڑپوں میں ماورائے عدالت قتل، مذہبی مجالس اور جلسوں پر پابندی کی شدید مذمت کی تھی۔ دفتر خارجہ کے ترجمان زاہد حفیظ چودھری نے ہفتہ کے روز ایک بیان میں قابض بھارتی فورسز کی جانب سے مقبوضہ جموں و کشمیر کے علاقے شوپیاں میں مزید چار کشمیریوں کے ماورائے عدالت قتل کی شدید مذمت کی۔ انہوں نے کہا تھا کہ محرم الحرام کے دوران مذہبی جلوسوں اور مجالس پر پابندیاں بھی قابلِ مذمت ہے۔ واضح رہے کہ گزشتہ ایک سال میں خواتین اور بچوں سمیت تقریبا 300 معصوم کشمیریوں کو بھارتی قابض فورسز جعلی انکاؤنٹرز، نام نہام ‘چھاپہ مار کارروائیوں’ اور دیگر مواقع پر پیلٹ گنز کے استعمال سمیت اپنی قوت کا بے جا استعمال کر کے مختلف واقعات کے تحت قتل کرچکی ہے۔ ترجمان دفتر خارجہ نے عالمی برادری سے مطالبہ کیا کہ وہ کشمیری عوام کے خلاف سنگین جرائم کے لیے بھارت کو جوابدہ بنائے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here