منی لانڈرنگ کیس، شہباز شریف کو جانے کی اجازت

0
89

لاہور کی احتساب عدالت نے رمضان شوگر ملز کیس میں منی لانڈرنگ کیس کی سماعت کے دوران مسلم لیگ نون کے صدر اور قومی اسمبلی میں قائدِ حزبِ اختلاف میاں شہباز شریف کو کمرۂ عدالت سے جانے کی اجازت دے دی۔ دورانِ سماعت شہباز شریف نے احتساب عدالت کے جج کے روبرو کہا کہ فاضل جج صاحب! میں نے اپنے دور میں کروڑوں روپے بچائے۔ انہوں نے کہا کہ میں نے قومی خزانے کو آج تک نقصان نہیں پہنچایا، ایک دھیلے کی کرپشن نہیں کی، خزانے سے تنخواہ تک نہیں لی۔ شہباز شریف کا کہنا تھا کہ میں پاکستان کے اندراربوں روپے کی سرمایہ کاری لے کر آیا ہوں، جج صاحب! اللّٰہ تعالیٰ اور اس کے رسول صلی اللّٰہ علیہ وسلم کی قسم کھاتا ہوں کہ کبھی عوام کے پیسے کو نقصان نہیں پہنچایا۔ فاضل جج نے کہا کہ شہباز شریف صاحب! بے فکر رہیں قانون کے مطابق بڑے غور سے عدالت الزامات کا جائزہ لے گی، اگر الزامات جھوٹے ہوئے تو آپ اس عدالت سے باعزت بری ہوں گے۔ میاں شہباز شریف نے کہا کہ مجھے اللّٰہ تعالیٰ اور آپ کی عدالت پر یقین ہے۔ عدالت نے شہباز شریف کی استدعا پر انہیں کمرۂ عدالت سے جانے کی اجازت دے دی۔فاضل جج نے کہا کہ آپ کی حاضری مکمل ہو چکی ہے، آپ جا سکتے ہیں۔ شہباز شریف رمضان شوگر ملز ریفرنس کیس میں آئندہ پیشی پر دوبارہ پیش ہوں گے۔ اس سے قبل شہباز شریف پیشی کے لیے احتساب عدالت میں پہنچے تو ان کی آمد پر نون لیگی کارکنوں نے نعرے بلند کیئے۔ شہباز شریف نے نیب عدالت میں پیشی کے موقع پر میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے کہا کہ نواز شریف کی صحت پر حکومت سیاست کر رہی ہے، حالانکہ حکومت نے ہی نواز شریف کو اجازت د ےکر باہر بھیجا تھا۔ انہوں نے کہا کہ اے پی سی تمام سیاسی جماعتیں مل کر کریں گی، اشیائے خورد ونوش کی قیمتیں بہت بڑھ چکی ہیں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here