صدارتی انتخابات، امریکی ایوان نمائندگان میں محکمہ ڈاک کیلئے 25 ارب ڈالر کی منظوری

0
184

امریکا میں صدارتی انتخابات سے قبل محمہ ڈاک کیلئے 25 ارب ڈالر کی منظوری دی گئی ہے،تفصیلات کے مطابق امریکی ایوانِ نمائندگان نے ہنگامی قانون سازی کے ذریعے محکمہ ڈاک کو 25 ارب ڈالر دینے کے بل کی منظوری دی ہے۔ کورونا وبا کے باعث امکان ظاہر کیا جا رہا ہے کہ بڑی تعداد میں امریکی ووٹر ڈاک کے ذریعے اپنا حقِ رائے دہی استعمال کریں گے۔ایوانِ نمائندگان میں 150 کے مقابلے میں 257 ووٹوں سے منظور کیے جانے والے اس ہنگامی بل کا مقصد محکمہ ڈاک میں کی جانے والی تبدیلیوں کا عمل روکنا ہے جس کی وجہ سے ملک بھر میں ڈاک کی ترسیل کے عمل میں خلل پڑ رہا تھا۔قانون سازی کے حق میں 24 ری پبلکنز ممبران نے بھی ووٹ دیا ہے۔ صدر ٹرمپ محکمہ ڈاک کو مزید وسائل فراہم کرنے کے مخالفت کر رہے ہیں اور وہ یہ عندیہ دے چکے ہیں اگر سینیٹ نے بھی اس بل کی منظوری دی تو وہ اسے ویٹو کر دیں گے۔دوسری جانب ایوانِ نمائندگان میں ووٹنگ سے قبل اسپیکر نینسی پیلوسی نے ذرائع ابلاغ سے گفتگو میں پوسٹ ماسٹر جنرل کے بیان پر شکوک و شبہات کا اظہار کیا تھا۔نینسی پیلوسی کا کہنا تھا کہ “اُن کے بیانات اپنی جگہ لیکن اُن پر عمل ایک الگ معاملہ ہے۔وائٹ ہاؤس میں انتظامی اور بجٹ اُمور کے دفتر نے جمعے کو ڈیمو کریٹک پارٹی کے مجوزہ بل کو تنقید کا نشانہ بنایا تھا۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here